کوئی انعام وفا ہے کہ صلا ہے کیا ہے

جاوید نسیمی

کوئی انعام وفا ہے کہ صلا ہے کیا ہے

جاوید نسیمی

MORE BYجاوید نسیمی

    کوئی انعام وفا ہے کہ صلا ہے کیا ہے

    اس نے یہ درد محبت جو دیا ہے کیا ہے

    بھولنے کو تجھے دل کیوں نہیں راضی ہوتا

    تیری یادوں میں کسک ہے کہ مزہ ہے کیا ہے

    کس نے دروازے پہ یہ رات گئے دستک دی

    یاد اس کی ہے کہ وہ خود کہ ہوا ہے کیا ہے

    تو جو مل جاتا ہے ہر بار بچھڑ کر مجھ کو

    یہ مقدر ہے کرم ہے کہ دعا ہے کیا ہے

    آج کیا پھر کسی ارمان نے دم توڑ دیا

    شور کیوں دل سے یہ جاویدؔ اٹھا ہے کیا ہے

    مآخذ :
    • کتاب : Khwab Aasmano ke (Pg. 157)
    • Author : Javed Nasimi
    • مطبع : Educational Publishing House (2014)
    • اشاعت : 2014

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY