کوئی کسی کا کہیں آشنا نہیں دیکھا

بیاں احسن اللہ خان

کوئی کسی کا کہیں آشنا نہیں دیکھا

بیاں احسن اللہ خان

MORE BYبیاں احسن اللہ خان

    کوئی کسی کا کہیں آشنا نہیں دیکھا

    سوائے اس کے ان آنکھوں نے کیا نہیں دیکھا

    یہ لوگ منع جو کرتے ہیں عشق سے مجھ کو

    انھوں نے یار کو دیکھا ہے یا نہیں دیکھا

    بھلائی کیا دل کافر نے بت میں پائی ہے

    جہاں میں کوئی اتنا برا نہیں دیکھا

    کچھ اس جہاں میں نہ دیکھیں گے کیونکہ اندھے ہیں

    اسی جہاں میں جنھوں نے خدا نہیں دیکھا

    بہ رنگ سایہ و خورشید اے بیاںؔ میں نے

    کبھو رقیب سے اس کو جدا نہیں دیکھا

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    کوئی کسی کا کہیں آشنا نہیں دیکھا فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY