کوئی سلسلہ نہیں جاوداں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

اظہر فراغ

کوئی سلسلہ نہیں جاوداں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

اظہر فراغ

MORE BYاظہر فراغ

    کوئی سلسلہ نہیں جاوداں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    میں تو ہر طرح سے ہوں رائیگاں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    مرے ہم نفس تو چراغ تھا تجھے کیا خبر مرے حال کی

    کہ جیا میں کیسے دھواں دھواں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    نہ ترا وصال وصال تھا نہ تری جدائی جدائی ہے

    وہی حالت دل بد گماں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    میں یہ چاہتا ہوں کہ عمر بھر رہے تشنگی مرے عشق میں

    کوئی جستجو رہے درمیاں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    مرے نقش پا تجھے دیکھ کر یہ جو چل رہے ہیں انہیں بتا

    ہے مرا سراغ مرا نشاں ترے ساتھ بھی ترے بعد بھی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY