Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کوئی تو دل کی نگاہوں سے دیکھتا جائے

مسعودہ حیات

کوئی تو دل کی نگاہوں سے دیکھتا جائے

مسعودہ حیات

MORE BYمسعودہ حیات

    کوئی تو دل کی نگاہوں سے دیکھتا جائے

    ہماری روح کے کچھ غم سمیٹتا جائے

    تمہارے ملنے کی ہر آس آج ٹوٹ گئی

    تمہیں بتاؤ کہ اب کس طرح جیا جائے

    ذرا تو سوچیے اس دل کا حال کیا ہوگا

    تلاش گل میں جو پتھر کی چوٹ کھا جائے

    سجا کے تم کو گلوں سے اٹھائے ہیں پتھر

    زمانہ کتنا ستم گر ہے کیا کیا جائے

    کریں گے کیسے حقیقت کا سامنا ہم لوگ

    ہمیں تو خواب ہی کوئی دکھا دیا جائے

    کسی طرح تو اندھیرے غموں کے چھٹ جائیں

    مرا بجھا ہوا دل ہی کوئی جلا جائے

    رہ حیات میں کانٹے بچھیں کہ پھول کھلیں

    یہ شرط ہے تری جانب وہ راستہ جائے

    مأخذ :
    • کتاب : bu-e-saman (Pg. 23)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے