کوئی یہ لاکھ کہے میرے بنانے سے ملا

مدن موہن دانش

کوئی یہ لاکھ کہے میرے بنانے سے ملا

مدن موہن دانش

MORE BYمدن موہن دانش

    کوئی یہ لاکھ کہے میرے بنانے سے ملا

    ہر نیا رنگ زمانہ کو پرانے سے ملا

    فکر ہر بار خموشی سے ملی ہے مجھ کو

    اور زمانہ یہ مجھے شور مچانے سے ملا

    اس کی تقدیر اندھیروں نے لکھی تھی شاید

    وہ اجالا جو چراغوں کو بجھانے سے ملا

    پوچھتے کیا ہو ملا کیسے یہ جنگل کو طلسم

    چھاؤں میں دھوپ کی رنگت کو ملانے سے ملا

    اور لوگوں سے ملاقات کہاں ممکن تھی

    وہ تو خود سے بھی ملا ہے تو بہانے سے ملا

    میری تشکیل تو کچھ اور ہوئی تھی دانشؔ

    یہ نیا نقش مجھے خود کو مٹانے سے ملا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مدن موہن دانش

    مدن موہن دانش

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY