کچھ بھی ہو یہ تو مرے یار نہیں ہو سکتا

منصور عثمانی

کچھ بھی ہو یہ تو مرے یار نہیں ہو سکتا

منصور عثمانی

MORE BYمنصور عثمانی

    کچھ بھی ہو یہ تو مرے یار نہیں ہو سکتا

    میں ترا حاشیہ بردار نہیں ہو سکتا

    دل سے تم جا تو رہے ہو مگر اتنا سن لو

    یہ دریچہ کبھی دیوار نہیں ہو سکتا

    رسم اظہار محبت میں ضروری ہی سہی

    یہ تماشا سر بازار نہیں ہو سکتا

    وصل کی چاہ کروں ہجر میں بھی آہ بھروں

    یہ مرے عشق کا معیار نہیں ہو سکتا

    اپنی تعریف سنی ہے تو یہ سچ بھی سن لے

    تجھ سے اچھا ترا کردار نہیں ہو سکتا

    مأخذ :
    • کتاب : Kashmakash (Pg. 30)
    • Author : Mansoor Usmani
    • مطبع : Najma House, Baradari, Moradabad (2007)
    • اشاعت : 2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY