کچھ لگی دل کی بجھا لوں تو چلے جائیے گا

بیدم شاہ وارثی

کچھ لگی دل کی بجھا لوں تو چلے جائیے گا

بیدم شاہ وارثی

MORE BYبیدم شاہ وارثی

    کچھ لگی دل کی بجھا لوں تو چلے جائیے گا

    خیر سینے سے لگا لوں تو چلے جائیے گا

    میں زخود رفتہ ہوا سنتے ہی جانے کی خبر

    پہلے میں آپ میں آ لوں تو چلے جائیے گا

    راستہ گھیرے ہیں ارمان و قلق حسرت و یاس

    میں ذرا بھیڑ ہٹا لوں تو چلے جائیے گا

    پیار کر لوں رخ روشن کی بلائیں لے لوں

    قدم آنکھوں سے لگا لوں تو چلے جائیے گا

    میرے ہونے ہی نے یہ روز سیہ دکھلایا

    اپنی ہستی کو مٹا لوں تو چلے جائیے گا

    چھوڑ کر زندہ مجھے آپ کہاں جائیں گے

    پہلے میں جان سے جا لوں تو چلے جائیے گا

    آپ کے جاتے ہی بیدمؔ کی سنے گا پھر کون

    اپنی بیتی میں سنا تو چلے جائیے گا

    مأخذ :
    • کتاب : jigar parah armagaan bedam shaah (Pg. 56)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے