کچھ تو میں بھی ڈرا ڈرا سا تھا

سلمان اختر

کچھ تو میں بھی ڈرا ڈرا سا تھا

سلمان اختر

MORE BYسلمان اختر

    کچھ تو میں بھی ڈرا ڈرا سا تھا

    اور کچھ راستا نیا سا تھا

    جھوٹ اور سچ کے درمیاں تھا جو

    آج وہ پل بھی ٹوٹتا سا تھا

    جس سے سارے چراغ جلتے تھے

    وہ چراغ آج کچھ بجھا سا تھا

    راس آئے نہ اس کے رسم و رواج

    شہر ہم سے خفا خفا سا تھا

    بت سمجھتے تھے جس کو سارے لوگ

    وہ مرے واسطے خدا سا تھا

    مأخذ :
    • کتاب : Soch Samajh (Pg. 37)
    • Author : Salman Akhtar
    • مطبع : Star Publishers Pvt.Ltd, N. Delhi (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY