کیا بات ہے کہ بات ہی دل کی ادا نہ ہو

راج نرائن راز

کیا بات ہے کہ بات ہی دل کی ادا نہ ہو

راج نرائن راز

MORE BYراج نرائن راز

    کیا بات ہے کہ بات ہی دل کی ادا نہ ہو

    مطلب کا میرے جیسے کوئی قافیا نہ ہو

    گلدان میں سجا کے ہیں ہم لوگ کتنے خوش

    وہ شاخ ایک پھول بھی جس پر نیا نہ ہو

    ہر لمحہ وقت کا ہے بس اک غنچۂ بخیل

    مٹھی جو اپنی بند کبھی کھولتا نہ ہو

    اب لوگ اپنے آپ کو پہچانتے نہیں

    پیش نگاہ جیسے کوئی آئینا نہ ہو

    وحشی ہوا کی روح تھی دیوار و در میں رات

    جنگل کی سمت کوئی دریچہ کھلا نہ ہو

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    کیا بات ہے کہ بات ہی دل کی ادا نہ ہو نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY