کیا کرے گا جا کے بیت اللہ تو

راسخ عظیم آبادی

کیا کرے گا جا کے بیت اللہ تو

راسخ عظیم آبادی

MORE BY راسخ عظیم آبادی

    کیا کرے گا جا کے بیت اللہ تو

    دل ہی سے کر اپنی پیدا راہ تو

    ڈوب جا بحر عمیق عشق میں

    یوں نہ ہرگز لے سکے گا تھاہ تو

    گھر سے نکلے گا وہ اپنی رات کو

    مت نکلیے دیکھیو اے ماہ تو

    کعبہ ڈھ جاوے تو بن سکتا ہے پھر

    دیکھیے دل ہے اسے مت ڈھاہ تو

    حال دل تھوڑا سا سن کر بول اٹھا

    بس اب اس قصہ کو کر کوتاہ تو

    یار کے دل تک اثر کے ساتھ جا

    آسماں تک جا نہ جا اے ماہ تو

    واجب‌ التعذیر ہے راسخؔ پہ حیف

    قدر سے اس کی نہیں آگاہ تو

    مآخذ:

    • Book : Ghazal Usne Chhedi(2) (Pg. 117)
    • Author : Farhat Ehsas
    • مطبع : Rekhta Books (2017)
    • اشاعت : 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY