کیا سب اس نے سن کر ان سنا کیا

پون کمار

کیا سب اس نے سن کر ان سنا کیا

پون کمار

MORE BYپون کمار

    کیا سب اس نے سن کر ان سنا کیا

    وہ خود میں اس قدر تھا مبتلا کیا

    میں ہوں گزرا ہوا سا ایک لمحہ

    مرے حق میں دعا کیا بد دعا کیا

    کرن آئی کہاں سے روشنی کی

    اندھیرے میں کوئی جگنو جلا کیا

    مسافر سب پلٹ کر آ رہے ہیں

    وہاں سے بند ہے ہر راستہ کیا

    میں اک مدت سے خود ہی گم شدہ ہوں

    بتاؤں آپ کو اپنا پتا کیا

    یہ محفل دو دھڑوں میں بٹ گئی ہے

    ذرا پوچھو ہے کس کا مدعا کیا

    محبت رہ گزر ہے کہکشاں سی

    سو اس میں ابتدا کیا انتہا کیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY