لائے گا رنگ ضبط فغاں دیکھتے رہو

ہوش ترمذی

لائے گا رنگ ضبط فغاں دیکھتے رہو

ہوش ترمذی

MORE BYہوش ترمذی

    لائے گا رنگ ضبط فغاں دیکھتے رہو

    پھوٹے گی ہر کلی میں زباں دیکھتے رہو

    برپا سر حیات ہے اک حشر دار و گیر

    دیتا ہے کون کس کو اماں دیکھتے رہو

    دم بھر کو آستان تمنا پہ ہے ہجوم

    جائے بچھڑ کے کون کہاں دیکھتے رہو

    ملنے کو ہے خموشئ اہل جنوں کی داد

    اٹھنے کو ہے زمیں سے دھواں دیکھتے رہو

    محفل میں ان کی شمع جلی ہے کہ جان و دل

    کھلتا ہے کب یہ راز نہاں دیکھتے رہو

    ہے برگ گل کو بارش مقراض کے پیام

    طرز تپاک اہل جہاں دیکھتے رہو

    آئی نگار غم کی صدا ہوشؔ ہم چلے

    تم امتیاز سود و زیاں دیکھتے رہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY