لب و رخسار کی قسمت سے دوری

اسد بھوپالی

لب و رخسار کی قسمت سے دوری

اسد بھوپالی

MORE BYاسد بھوپالی

    لب و رخسار کی قسمت سے دوری

    رہے گی زندگی کب تک ادھوری

    بہت تڑپا رہے ہیں دو دلوں کو

    کئی نازک تقاضے لا شعوری

    کئی راتوں سے ہے آغوش سونا

    کئی راتوں کی نیندیں ہیں ادھوری

    خدا سمجھے جنون جستجو کو

    سر منزل بھی ہے منزل سے دوری

    عجب انداز کے شام و سحر ہیں

    کوئی تصویر ہو جیسے ادھوری

    خدا کو بھول ہی جائے زمانہ

    ہر اک جو آرزو ہو جائے پوری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY