لب پہ مرے فریاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

ابرار عابد

لب پہ مرے فریاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

ابرار عابد

MORE BYابرار عابد

    لب پہ مرے فریاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    مجھ کو کچھ بھی یاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    قلب شکستہ پر جو نہ گزری مجھ آشفتہ پر جو نہ بیتی

    ایسی کوئی افتاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    تھا جو ارمانوں کا ڈیرا آرزوؤں کا حسیں بسیرا

    اب وہ مکاں آباد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    کیسی صبح کی سرد ہوائیں کیسی شام کی مست فضائیں

    طائر دل آزاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    غم کی کشتی کھے سکتا ہوں ساغر ہاتھ میں لے سکتا ہوں

    اذن دل برباد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    چھین لیا ہونٹوں کا تبسم خشک کیا آنکھوں کا قلزم

    کچھ کم یہ بیداد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    چھیڑ نہ ماضی کے افسانے یاد دلا مت گئے زمانے

    دل عابدؔ کا شاد نہیں ہے اے غم دنیا اے غم جاناں

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY