لگاؤ نہ جب دل تو پھر کیوں لگاوٹ

وحشتؔ رضا علی کلکتوی

لگاؤ نہ جب دل تو پھر کیوں لگاوٹ

وحشتؔ رضا علی کلکتوی

MORE BYوحشتؔ رضا علی کلکتوی

    لگاؤ نہ جب دل تو پھر کیوں لگاوٹ

    نہیں مجھ کو بھاتی تمہاری بناوٹ

    پڑا تھا اسے کام میری جبیں سے

    وہ ہنگامہ بھولی نہیں تیری چوکھٹ

    یہ تمکیں ہے اور لب ہوں جان تبسم

    نہ کھل جائے اے شوخ تیری بناوٹ

    میں دھوکے ہی کھایا کیا زندگی میں

    قیامت تھی اس آشنا کی لگاوٹ

    ٹھکانا ترا پھر کہیں بھی نہ ہوگا

    نہ چھوٹے کبھی وحشتؔ اس بت کی چوکھٹ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY