لوٹ آئے گا دیکھنا مرے دوست

اعزاز کاظمی

لوٹ آئے گا دیکھنا مرے دوست

اعزاز کاظمی

MORE BYاعزاز کاظمی

    لوٹ آئے گا دیکھنا مرے دوست

    جگمگائے گا راستہ مرے دوست

    حضرت داغؔ کے میں سائے میں ہوں

    حضرت جون ایلیاؔ مرے دوست

    کچھ گنہ گار بھی ہیں یار مرے

    اور ہیں چند پارسا مرے دوست

    میں تجھے چھوڑ کر نہ جاتا مگر

    آڑے آئی مری انا مرے دوست

    میں مرا کمرہ میری وحشت تو

    خامشی شور اک خلا مرے دوست

    کبھی فکر معاش اور کبھی دل

    دکھ ہیں میرے جدا جدا مرے دوست

    یار اعزازؔ چل نکلتے ہیں

    موت نے مجھ سے کہہ دیا مرے دوست

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY