لوگو یہ عجیب سانحہ ہے

صابر وسیم

لوگو یہ عجیب سانحہ ہے

صابر وسیم

MORE BYصابر وسیم

    لوگو یہ عجیب سانحہ ہے

    مجھ میں کوئی قتل ہو رہا ہے

    کس کی ہے تلاش کیا بتائیں

    اپنا ہی وجود کھو گیا ہے

    سوئیں گے ازل میں جا کے ہم سب

    دنیا تو عظیم رت جگا ہے

    سچ کو ہے دوام اس جہاں میں

    مجھ سے تو یہی کہا گیا ہے

    مرنا ہے یہاں بہت غنیمت

    جینا تو محال ہو چکا ہے

    دے گا وہ ضرور سنگ مجھ کو

    جس نے تجھے آئنہ کیا ہے

    آئی ہے طویل ہجر کی شب

    یہ دل سر شام جل گیا ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Asaleeb (Pg. 602)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY