مانا کہ رنگ رنگ ترا پیرہن بھی ہے

جاں نثاراختر

مانا کہ رنگ رنگ ترا پیرہن بھی ہے

جاں نثاراختر

MORE BYجاں نثاراختر

    مانا کہ رنگ رنگ ترا پیرہن بھی ہے

    پر اس میں کچھ کرشمہ عکس بدن بھی ہے

    عقل معاش و حکمت دنیا کے باوجود

    ہم کو عزیز عشق کا دیوانہ پن بھی ہے

    مطرب بھی تو ندیم بھی تو ساقیا بھی تو

    تو جان انجمن ہی نہیں انجمن بھی ہے

    بازو چھوا جو تو نے تو اس دن کھلا یہ راز

    تو صرف رنگ و بو ہی نہیں ہے بدن بھی ہے

    یہ دور کس طرح سے کٹے گا پہاڑ سا

    یارو بتاؤ ہم میں کوئی کوہ کن بھی ہے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    مانا کہ رنگ رنگ ترا پیرہن بھی ہے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY