محفل محفل سناٹے ہیں

احمد راہی

محفل محفل سناٹے ہیں

احمد راہی

MORE BY احمد راہی

    محفل محفل سناٹے ہیں

    درد کی گونج پہ کان دھرے ہیں

    دل تھا شور تھا ہنگامے تھے

    یارو ہم بھی تم جیسے ہیں

    موج ہوا میں آگ بھری ہے

    بہتے دریا کھول اٹھے ہیں

    ارمانوں کے نرم شگوفے

    شاخوں کے ہمراہ جلے ہیں

    یہ جو ڈھیر ہیں یہ جو کھنڈر ہیں

    ماضی کی گلیاں کوچے ہیں

    جن کو دیکھنا بس میں نہیں تھا

    ایسے بھی منظر دیکھے ہیں

    کون دلوں پر دستک دے گا

    یادوں نے دم سادھ لیے ہیں

    مآخذ:

    • Book: Rag-e-jan (Pg. 65)
    • Author: Ahmad Rahi
    • مطبع: Al-Hamd Publication (2005)
    • اشاعت: 2005

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites