میکشی اب مری عادت کے سوا کچھ بھی نہیں

جاں نثاراختر

میکشی اب مری عادت کے سوا کچھ بھی نہیں

جاں نثاراختر

MORE BY جاں نثاراختر

    میکشی اب مری عادت کے سوا کچھ بھی نہیں

    یہ بھی اک تلخ حقیقت کے سوا کچھ بھی نہیں

    فتنۂ عقل کے جویا مری دنیا سے گزر

    میری دنیا میں محبت کے سوا کچھ بھی نہیں

    دل میں وہ شورش جذبات کہاں تیرے بغیر

    ایک خاموش قیامت کے سوا کچھ بھی نہیں

    مجھ کو خود اپنی جوانی کی قسم ہے کہ یہ عشق

    اک جوانی کی شرارت کے سوا کچھ بھی نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    میکشی اب مری عادت کے سوا کچھ بھی نہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites