میں بھی آگے بڑھوں اور بھیڑ کا حصہ ہو جاؤں

جاوید نسیمی

میں بھی آگے بڑھوں اور بھیڑ کا حصہ ہو جاؤں

جاوید نسیمی

MORE BYجاوید نسیمی

    میں بھی آگے بڑھوں اور بھیڑ کا حصہ ہو جاؤں

    اس سے اچھا تو یہی ہے کہ میں تنہا ہو جاؤں

    پیاس کو میری جو اک جام نہ دے پایا کبھی

    تشنگی اس کی یہ کہتی ہے میں دریا ہو جاؤں

    مجھ کو جکڑے ہوئے رشتوں کی حقیقت مت پوچھ

    بس چلے میرا اگر تو میں اکیلا ہو جاؤں

    لے کے جاؤں کہاں احساس وفاداری کو

    دل تو کہتا ہے کہ میں بھی ترے جیسا ہو جاؤں

    ہو کسی طور تو دنیا کی توجہ مجھ پر

    ایک دو پل کے لیے میں بھی تماشا ہو جاؤں

    دل کی مجبوری عجب چیز ہے ورنہ جاویدؔ

    کون چاہے گا بھلا خود کہ میں رسوا ہو جاؤں

    مآخذ
    • کتاب : Khwab Aasmano ke (Pg. 84)
    • Author : Javed Nasimi
    • مطبع : Educational Publishing House (2014)
    • اشاعت : 2014

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY