میں ہی بولوں گا نہ تو بولے گا

راغب مرادآبادی

میں ہی بولوں گا نہ تو بولے گا

راغب مرادآبادی

MORE BYراغب مرادآبادی

    میں ہی بولوں گا نہ تو بولے گا

    بے گناہوں کا لہو بولے گا

    موسم گل میں یہ اعجاز جنوں

    ایک اک تار رفو بولے گا

    مے کدہ بھی ہے کرامت کا مقام

    دست ساقی میں سبو بولے گا

    پاس پیمان محبت ہے مجھے

    چپ رہیں دوست عدو بولے گا

    میں بد اخلاق نہیں ہوں مجھ سے

    کیوں بت عربدہ جو بولے گا

    جرم حق گوئی میں سر جانے پر

    میرا اک اک بن مو بولے گا

    ہوک اٹھے گی مرے دل سے راغبؔ

    جب پپیہا لب جو بولے گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY