میں ہوں حیراں یہ سلسلہ کیا ہے

آس فاطمی

میں ہوں حیراں یہ سلسلہ کیا ہے

آس فاطمی

MORE BYآس فاطمی

    میں ہوں حیراں یہ سلسلہ کیا ہے

    آئنہ مجھ میں ڈھونڈھتا کیا ہے

    خود سے بیتاب ہوں نکلنے کو

    کوئی بتلائے راستہ کیا ہے

    میں حبابوں کو دیکھ کر سمجھا

    ابتدا کیا ہے انتہا کیا ہے

    میں ہوں یکجا تو پھر مرے اندر

    ایک مدت سے ٹوٹتا کیا ہے

    خود ہی تنہائیوں میں چلاؤں

    خود ہی سوچوں یہ شور سا کیا ہے

    جانے کب کیا جنوں میں کر جاؤں

    میں تو دیوانہ ہوں مرا کیا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY