میں جہاں تم کو بلاتا ہوں وہاں تک آؤ

علی سردار جعفری

میں جہاں تم کو بلاتا ہوں وہاں تک آؤ

علی سردار جعفری

MORE BYعلی سردار جعفری

    میں جہاں تم کو بلاتا ہوں وہاں تک آؤ

    میری نظروں سے گزر کر دل و جاں تک آؤ

    پھر یہ دیکھو کہ زمانے کی ہوا ہے کیسی

    ساتھ میرے مرے فردوس جواں تک آؤ

    حوصلہ ہو تو اڑو میرے تصور کی طرح

    میری تخئیل کے گلزار جناں تک آؤ

    تیغ کی طرح چلو چھوڑ کے آغوش نیام

    تیر کی طرح سے آغوش کماں تک آؤ

    پھول کے گرد پھرو باغ میں مانند نسیم

    مثل پروانہ کسی شمع تپاں تک آؤ

    لو وہ صدیوں کے جہنم کی حدیں ختم ہوئیں

    اب ہے فردوس ہی فردوس جہاں تک آؤ

    چھوڑ کر وہم و گماں حسن یقیں تک پہنچو

    پر یقیں سے بھی کبھی وہم و گماں تک آؤ

    اسی دنیا میں دکھا دیں تمہیں جنت کی بہار

    شیخ جی تم بھی ذرا کوئے بتاں تک آؤ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY