میں صحرا تھا جزیرہ ہو گیا ہوں

انیس انصاری

میں صحرا تھا جزیرہ ہو گیا ہوں

انیس انصاری

MORE BYانیس انصاری

    INTERESTING FACT

    17فروری2000،بریلی

    میں صحرا تھا جزیرہ ہو گیا ہوں

    سمندر دیکھ تیرا ہو گیا ہوں

    بجز اک نام کہتا ہوں نہ سنتا

    میں ایسا گونگا بہرا ہو گیا ہوں

    تری آنکھوں نے دھویا ہے مجھے یوں

    میں بالکل صاف ستھرا ہو گیا ہوں

    تو سورج ہے میں آئینے کا ٹکڑا

    کرن چھو کر سنہرا ہو گیا ہوں

    مجھے روشن کئے ہے عکس تیرا

    میں تیرا شوخ چہرہ ہو گیا ہوں

    بڑی لذت ہے تیری قربتوں میں

    تر و تازہ سویرا ہو گیا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY