میں اجڑا شہر تھا تپتا تھا دشت کے مانند (ردیف .. و)

فضیل جعفری

میں اجڑا شہر تھا تپتا تھا دشت کے مانند (ردیف .. و)

فضیل جعفری

MORE BYفضیل جعفری

    میں اجڑا شہر تھا تپتا تھا دشت کے مانند

    ترا وجود کہ سیراب کر گیا مجھ کو

    ہر آدمی میں تھے دو چار آدمی پنہاں

    کسی کو ڈھونڈنے نکلا کوئی ملا مجھ کو

    ہے میرے درد کو درکار گوشت کی خوشبو

    بہت نہیں تری یادوں کا سلسلہ مجھ کو

    تری بدن میں مرے خواب مسکراتے ہیں

    دکھا کبھی مرے خوابوں کا آئینہ مجھ کو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY