میں وہم بیچتا ہوں وسوسے بناتا ہوں

محمد اظہار الحق

میں وہم بیچتا ہوں وسوسے بناتا ہوں

محمد اظہار الحق

MORE BYمحمد اظہار الحق

    میں وہم بیچتا ہوں وسوسے بناتا ہوں

    ستارے دیکھتا ہوں زائچے بناتا ہوں

    گراں ہے اتنا تو کیوں وقت ہو مجھے درکار

    مزے سے بیٹھا ہوا بلبلے بناتا ہوں

    مسافروں کا مرے گھر ہجوم رہتا ہے

    میں پیاس بانٹتا ہوں آبلے بناتا ہوں

    خرید لاتا ہوں پہلے ترے وصال کے خواب

    پھر ان سے اپنے لیے رتجگے بناتا ہوں

    یہی نہیں کہ زمینیں مری اچھوتی ہیں

    میں آسمان بھی اپنے لیے بناتا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY