مسئلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

مظفر رزمی

مسئلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

مظفر رزمی

MORE BYمظفر رزمی

    مسئلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    حوصلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    کچھ نہ کچھ بات مرے عزم سفر میں ہے ضرور

    قافلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    جب بھی اے دوست تری سمت بڑھاتا ہوں قدم

    فاصلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    غم مرے ساتھ نکلتے ہیں سویرے گھر سے

    دن ڈھلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    پا برہنہ جو گزرتا ہوں ترے کوچے سے

    آبلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    میرے ماحول میں ہر سمت برے لوگ نہیں

    کچھ بھلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    جب بھی کرتا ہے قبیلہ مرا ہجرت رزمیؔ

    زلزلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    مسئلے بھی مرے ہم راہ چلے آتے ہیں نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY