متاع کوثر و زمزم کے پیمانے تری آنکھیں

ساغر صدیقی

متاع کوثر و زمزم کے پیمانے تری آنکھیں

ساغر صدیقی

MORE BYساغر صدیقی

    متاع کوثر و زمزم کے پیمانے تری آنکھیں

    فرشتوں کو بنا دیتی ہیں دیوانے تری آنکھیں

    جہان رنگ و بو الجھا ہوا ہے ان کے ڈوروں میں

    لگی ہیں کاکل تقدیر سلجھانے تری آنکھیں

    اشاروں سے دلوں کو چھیڑ کر اقرار کرتی ہیں

    اٹھاتی ہیں بہار نو کے نذرانے تری آنکھیں

    وہ دیوانے زمام لالہ و گل تھام لیتے ہیں

    جنہیں منسوب کر دیتی ہیں ویرانے تری آنکھیں

    شگوفوں کو شراروں کا مچلتا روپ دیتی ہیں

    حقیقت کو بنا دیتی ہیں افسانے تری آنکھیں

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Saghar (Pg. 325)
    • Author : Saghar Siddiqui
    • مطبع : Khazina Ilm-O-Adab Al-Kareem Market Urdu Bazar Lahore (2013)
    • اشاعت : 2013

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے