نظر سے گفتگو خاموش لب تمہاری طرح

بشیر بدر

نظر سے گفتگو خاموش لب تمہاری طرح

بشیر بدر

MORE BYبشیر بدر

    نظر سے گفتگو خاموش لب تمہاری طرح

    غزل نے سیکھے ہیں انداز سب تمہاری طرح

    جو پیاس تیز ہو تو ریت بھی ہے چادر آب

    دکھائی دور سے دیتے ہیں سب تمہاری طرح

    بلا رہا ہے زمانہ مگر ترستا ہوں

    کوئی پکارے مجھے بے سبب تمہاری طرح

    ہوا کی طرح میں بے تاب ہوں کہ شاخ گلاب

    لہکتی ہے مری آہٹ پہ اب تمہاری طرح

    مثال وقت میں تصویر صبح و شام ہوں اب

    مرے وجود پہ چھائی ہے شب تمہاری طرح

    سناتے ہیں مجھے خوابوں کی داستاں اکثر

    کہانیوں کے پر اسرار لب تمہاری طرح

    مأخذ :
    • کتاب : Aasman (Pg. 62)
    • Author : Bashir Badar
    • مطبع : M.R. Publications (2011)
    • اشاعت : 2011

    موضوعات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے