میرے اور اپنے درمیاں اس نے

سریندر شجر

میرے اور اپنے درمیاں اس نے

سریندر شجر

MORE BYسریندر شجر

    میرے اور اپنے درمیاں اس نے

    کتنا پھیلا دیا دھواں اس نے

    خود بلاتی تھی منزل مقصود

    طے نہ کیں اپنی دوریاں اس نے

    جن سے پہچان تھی کبھی اس کی

    کھو دیے ہیں وہ سب نشاں اس نے

    جھوٹ بولا نہیں گیا اس سے

    کر لیا خود کو بے زباں اس نے

    بے خبر ہے وہ موسموں سے شجرؔ

    بند کر لی تھیں کھڑکیاں اس نے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY