منبروں پر بھی گنہ گار نظر آتے ہیں

شکیل شمسی

منبروں پر بھی گنہ گار نظر آتے ہیں

شکیل شمسی

MORE BYشکیل شمسی

    منبروں پر بھی گنہ گار نظر آتے ہیں

    سب قیامت کے ہی آثار نظر آتے ہیں

    ان مسیحاؤں سے اللہ بچائے ہم کو

    شکل و صورت سے جو بیمار نظر آتے ہیں

    جانے کیا ٹوٹ گیا ہے کہ ہر اک رات مجھے

    خواب میں گنبد و مینار نظر آتے ہیں

    مات دیتے ہیں یزیدوں کو لہو سے ہم ہی

    ہم ہی نیزوں پہ ہر اک بار نظر آتے ہیں

    آنکھ کھولی ہے فسادات میں جن بچوں نے

    ان کو خوابوں میں بھی ہتھیار نظر آتے ہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY