aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

مرا لباس بدن تار تار کرتے ہوئے

آصف بلال

مرا لباس بدن تار تار کرتے ہوئے

آصف بلال

MORE BYآصف بلال

    مرا لباس بدن تار تار کرتے ہوئے

    گزر گیا وہ مجھے شرمسار کرتے ہوئے

    میں جس بدن کی خراشوں پہ چیخ اٹھتا ہوں

    وہ ہنس رہا تھا کلیجے پہ وار کرتے ہوئے

    پلٹنے والے تجھے دیر ہو نہ جائے کہیں

    میں مر نہ جاؤں ترا انتظار کرتے ہوئے

    یہ کون سمجھے گا گزرا ہوں کس اذیت سے

    کسی کے جھیل سی آنکھوں کو پار کرتے ہوئے

    ہزار رنگ دکھائے یہ گردش دوراں

    گزر ہی جائیں گے ہم ذکر یار کرتے ہوے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے