مرے بارے میں کچھ سوچو مجھے نیند آ رہی ہے

محسن اسرار

مرے بارے میں کچھ سوچو مجھے نیند آ رہی ہے

محسن اسرار

MORE BY محسن اسرار

    مرے بارے میں کچھ سوچو مجھے نیند آ رہی ہے

    مجھے ضائع نہ ہونے دو مجھے نیند آ رہی ہے

    مرے اندر کے دکھ چہرے سے ظاہر ہو رہے ہیں

    مری تصویر مت کھینچو مجھے نیند آ رہی ہے

    تو کیا سارے گلے شکوے ابھی کر لو گے مجھ سے

    کچھ اب کل کے لیے رکھو مجھے نیند آ رہی ہے

    سحر ہوگی تو دیکھیں گے کہ ہیں کیا کیا مسائل

    ذرا سی دیر سونے دو مجھے نیند آ رہی ہے

    تمہارا کام ہے ساری حسیں بے دار رکھنا

    مرے شانے پہ سر رکھو مجھے نیند آ رہی ہے

    بہت کچھ تم سے کہنا تھا مگر میں کہہ نہ پایا

    لو میری ڈائری رکھ لو مجھے نیند آ رہی ہے

    مآخذ:

    • کتاب : shor bhi sannata bhi (rekhta website) (Pg. 39)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY