میان کار فن لفظوں کی قسمت جاگ اٹھتی ہے

پیرزادہ قاسم

میان کار فن لفظوں کی قسمت جاگ اٹھتی ہے

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    میان کار فن لفظوں کی قسمت جاگ اٹھتی ہے

    غزل تخلیق کرتا ہوں محبت جاگ اٹھتی ہے

    بہت مسرور رہتا ہوں بہت چہرہ سجاتا ہوں

    مگر آئینے میں اک اور صورت جاگ اٹھتی ہے

    میں کتنی بار دنیا تج کے جا بیٹھا ہوں گوشے میں

    مگر ہر بار دنیا کی ضرورت جاگ اٹھتی ہے

    عجب دیکھا کرشمہ لفظ کی بازی گری کا بھی

    سخن معدوم ہو جاتا ہے شہرت جاگ اٹھتی ہے

    محبت اس طرح تو منقلب ہوتے نہ دیکھی تھی

    ذرا بے اعتباری ہو تو نفرت جاگ اٹھتی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY