aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

محبت کا یہ رخ دیکھا نہیں تھا

فرحت ندیم ہمایوں

محبت کا یہ رخ دیکھا نہیں تھا

فرحت ندیم ہمایوں

MORE BYفرحت ندیم ہمایوں

    محبت کا یہ رخ دیکھا نہیں تھا

    وہ یوں بدلے گا یہ سوچا نہیں تھا

    عجب ہے سہہ کے زخم بے وفائی

    یہ دل کہتا ہے وہ ایسا نہیں تھا

    سبب کوئی تو ہے ان نفرتوں کا

    میں جھوٹا تھا کہ وہ سچا نہیں تھا

    نہ جانے کیوں مرے حصے میں آیا

    وہ دکھ قسمت میں جو لکھا نہیں تھا

    بہت تنہائیاں تھیں اس سے پہلے

    مگر اتنا بھی میں تنہا نہیں تھا

    چلو کچھ تو گھٹن کم ہو گئی ہے

    بہت دن ہو گئے رویا نہیں تھا

    کنارے پر کھڑا وہ کہہ رہا ہے

    سمندر اس قدر گہرا نہیں تھا

    سبھی کچھ ہے ندیمؔ اب پاس میرے

    بس اک وہ شخص جو میرا نہیں تھا

    مأخذ:

    Sare Khawab us ke hain (Pg. 89)

    • مصنف: Farhat Nadeem Humayun
      • اشاعت: 2010
      • ناشر: Mugals Goup Of Publications
      • سن اشاعت: 2010

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے