محبت میں کمی آنے لگی ہے

شاہدہ مجید

محبت میں کمی آنے لگی ہے

شاہدہ مجید

MORE BY شاہدہ مجید

    محبت میں کمی آنے لگی ہے

    اسے مصروفیت کھانے لگی ہے

    ابھی تم تھے اجالا تھا مگر اب

    اچانک تیرگی چھانے لگی ہے

    سکوں ملنے لگا ہے اب جنوں سے

    مری وحشت مجھے بھانے لگی ہے

    دلوں کو ڈس رہی ہے بد گمانی

    یہ ناگن زہر پھیلانے لگی ہے

    سہیلی ہے مری برسوں پرانی

    اداسی مجھ کو خوش آنے لگی ہے

    عجب سی دل میں چنگاری دبی تھی

    جسے برسات بھڑکانے لگی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY