مجھ سے بچھڑے ہو تو رہ جاؤ گے تنہا بھی نہیں

اقبال اشہر قریشی

مجھ سے بچھڑے ہو تو رہ جاؤ گے تنہا بھی نہیں

اقبال اشہر قریشی

MORE BYاقبال اشہر قریشی

    مجھ سے بچھڑے ہو تو رہ جاؤ گے تنہا بھی نہیں

    میں تمہیں یاد نہیں آؤں گا ایسا بھی نہیں

    میں نے دامن بھی بچایا تو گنہ گار ہوا

    اور پھر یوں ہوا غرقاب کہ ابھرا بھی نہیں

    وہ ترا ضبط محبت ہو کہ دنیا کا نفاق

    سب ہی اپنے ہیں کوئی درد پرایا بھی نہیں

    قدرداں چاہنے والوں کے عجب ہوتے ہیں

    اس نے پہچان لیا اور مجھے دیکھا بھی نہیں

    میں اسے بھول کے زندہ بھی نہیں رہ سکتا

    اور مرا عہد مجھے پوچھنے والا بھی نہیں

    مأخذ :
    • کتاب : Be Sada Faryaad (Ghazals) (Pg. 75)
    • Author : Iqbal Ashhar Qureshi
    • مطبع : Fine Art Group Publications (2012)
    • اشاعت : 2012

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY