مجھے بھول جانے والے مرے دل کی کچھ خبر بھی

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

مجھے بھول جانے والے مرے دل کی کچھ خبر بھی

کنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

MORE BYکنور مہیندر سنگھ بیدی سحر

    مجھے بھول جانے والے مرے دل کی کچھ خبر بھی

    مری آنکھ پر نہ جانا یہ تو خشک بھی ہے تر بھی

    یہ قدم رکے رکے سے یہ جھکا جھکا سا سر بھی

    یہیں ان کا نقش پا ہے یہی ان کی رہ گزر بھی

    فلک آشنا سہی ہم مگر احتیاط لازم

    کہ قفس میں لے نہ جائے یہ مذاق بال و پر بھی

    بڑے شوق سے ہوئے تھے یوں حرم کو ہم روانہ

    یہ خبر نہ تھی کہ رہ میں ہے تمہارا سنگ در بھی

    ہو دراز عمر یا رب مرے شیخ و برہمن کی

    کہیں ختم ہو نہ جائے یہ جہان خیر و شر بھی

    نہ بدل رہی ہیں گھڑیاں نہ ستارے ڈوبتے ہیں

    کہیں تھک کے سو گئی ہے شب ہجر کی سحر بھی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY