مطرب دل کی وہ تانیں کیا ہوئیں

اختر انصاری

مطرب دل کی وہ تانیں کیا ہوئیں

اختر انصاری

MORE BY اختر انصاری

    مطرب دل کی وہ تانیں کیا ہوئیں

    وہ تخیل کی اڑانیں کیا ہوئیں

    کیا ہوئے وہ ترچھی نظروں کے خدنگ

    ابرووں کی وہ کمانیں کیا ہوئیں

    وہ ادائیں جن پہ ہوتی تھیں نثار

    چاہنے والوں کی جانیں کیا ہوئیں

    کیا ہوئے ٹوٹے دلوں کے زمزمے

    بے زبانوں کی زبانیں کیا ہوئیں

    کیا ہوئے اخترؔ امیدوں کے حصار

    وہ عزائم کی چٹانیں کیا ہوئیں

    مآخذ:

    • کتاب : Range-e-Gazal (Pg. 437)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY