نہ جانے کیا کمی تھی چاہتوں میں

تری پراری

نہ جانے کیا کمی تھی چاہتوں میں

تری پراری

MORE BYتری پراری

    نہ جانے کیا کمی تھی چاہتوں میں

    مزہ کچھ بھی نہ آیہ رنجشوں میں

    معین تھا یہی موسم ملن کا

    میں اکثر سوچتا ہوں بارشوں میں

    وو اک لڑکی میں جس کا ہو نہ پایہ

    کمی کچھ تھی نہ اس کی منتوں میں

    جسے تم میری قسمت کہہ رہے ہو

    وو کب سے پھر رہی ہے گردشوں میں

    ہر اک منزل پے جا کے لوٹ آیا

    کمی سی کھل رہی تھی منزلوں میں

    ملا ان کو نہ دشمن من مطابق

    جو پیچھے رہ گئے تھے کوششوں میں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY