نہ کہہ حق میں بزرگوں کی کڑی بات

امداد علی بحر

نہ کہہ حق میں بزرگوں کی کڑی بات

امداد علی بحر

MORE BYامداد علی بحر

    نہ کہہ حق میں بزرگوں کی کڑی بات

    کہیں گے لوگ چھوٹا منہ بڑی بات

    کہے اک بات پھولے سو شگوفے

    شریروں نے بنائی پھلجھڑی بات

    متانت ہے بہت کم بولتی میں

    خموشی دوپہر ہو دو گھڑی بات

    مجھے بھاتا ہے ہلکانا تمہارا

    دہن گل کی کلی ہے گل جھڑی بات

    بندھے مضمون پر کھولو نہ منہ بحرؔ

    مزا دیتی نہیں کانوں پڑی بات

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY