نہ کوئی وجہ خوشی ہے نہ کوئی باعث غم

برجیس طلعت نظامی

نہ کوئی وجہ خوشی ہے نہ کوئی باعث غم

برجیس طلعت نظامی

MORE BYبرجیس طلعت نظامی

    نہ کوئی وجہ خوشی ہے نہ کوئی باعث غم

    جو تم نہیں ہو تو دل کا عجیب ہے عالم

    نہ میکدے کی ضرورت رہی نہ ساقی کی

    اب اپنے واسطے کافی ہے دیدۂ پر نم

    مجھے نہ چھیڑ کہ میں ایسے اک مقام پہ ہوں

    نظر اٹھاؤں تو رک جائے گردش عالم

    ترے خیال میں اس وقت ڈوب جاتی ہوں

    مزاج وقت کو پاتی ہوں جب کبھی برہم

    ہمارے دل کو سمندر کی آرزو کیوں ہے

    اگر حیات کا حاصل ہے قطرۂ شبنم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY