نہ کچھ ستم سے ترے آہ آہ کرتا ہوں

شیخ ظہور الدین حاتم

نہ کچھ ستم سے ترے آہ آہ کرتا ہوں

شیخ ظہور الدین حاتم

MORE BYشیخ ظہور الدین حاتم

    نہ کچھ ستم سے ترے آہ آہ کرتا ہوں

    میں اپنے دل کی مدد گاہ گاہ کرتا ہوں

    نہ آفریں نہ دلاسا نہ دل دہی نہ نگاہ

    غرض میں ہی ہوں جو تجھ سے نباہ کرتا ہوں

    اسے کہیں ہیں سنا ہوگا شیخ خوف و رجا

    ادھر تو توبہ ادھر میں گناہ کرتا ہوں

    تو اپنے دل کی سیاہی کرے ہے دھو کے سفید

    میں اپنے نامہ عمل کا سیاہ کرتا ہوں

    تو روز سنگ سے مسجد کے سر پٹکتا ہے

    میں اس کا نقش قدم سجدہ گاہ کرتا ہوں

    تجھے ہے اپنی عبادت اوپر نظر کیوں کر

    میں اس کے فضل کے اوپر نگاہ کرتا ہوں

    مثال رشتۂ تسبیح روز و شب حاتمؔ

    چھپے چھپے میں کسی دل میں راہ کرتا ہوں

    مأخذ :
    • کتاب : Diwan Zadah (Pg. 241)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY