نہ مرے پاس عزت رمضاں

تاباں عبد الحی

نہ مرے پاس عزت رمضاں

تاباں عبد الحی

MORE BYتاباں عبد الحی

    نہ مرے پاس عزت رمضاں

    نہ کبھو کی عبادت رمضاں

    دشمن عیش کا میں دشمن ہوں

    گو کہ تھے فرض حرمت رمضاں

    مجھ کو مسجد سے کام نہیں الا

    سننے جاتا ہوں رخصت رمضاں

    شیخ روتا ہے اپنی روزی کو

    کہ نہ از بہر فرقت رمضاں

    کچھ نہ حاصل ہوا کسی کے تئیں

    غیر فاقہ بدولت رمضاں

    زاہد خشک کے تئیں دیکھے

    یاد آتی ہے صورت رمضاں

    میرے ہم مشربوں میں آ تاباںؔ

    ریجھتے ہوں گے حضرت رمضاں

    مأخذ :
    • Deewan-e-Taban Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY