نہ پوچھئے کہ کہا کیا ہے ان کہی کیا ہے

پیرزادہ قاسم

نہ پوچھئے کہ کہا کیا ہے ان کہی کیا ہے

پیرزادہ قاسم

MORE BYپیرزادہ قاسم

    نہ پوچھئے کہ کہا کیا ہے ان کہی کیا ہے

    عذاب جھیل رہا ہوں سخنوری کیا ہے

    عجب ہے ذوق تماشا کہ گھر جلا کر لوگ

    یہ چاہتے ہیں سمجھنا کہ روشنی کیا ہے

    پس نظر ہو اگر مقصد حیات تو پھر

    یہ زیست وقت گزاری ہے زندگی کیا ہے

    میں ملتجی ہوں نہ وہ ملتفت مگر پھر بھی

    یہ ایک آگ دلوں میں لگی ہوئی کیا ہے

    میں دل کے داغ دکھاؤں کہ زخم سر ان کو

    جو پوچھتے ہیں کہ مفہوم دوستی کیا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY