نہ سنو میرے نالے ہیں درد بھرے دار و اثرے آہ سحرے

بیدم شاہ وارثی

نہ سنو میرے نالے ہیں درد بھرے دار و اثرے آہ سحرے

بیدم شاہ وارثی

MORE BYبیدم شاہ وارثی

    نہ سنو میرے نالے ہیں درد بھرے دار و اثرے آہ سحرے

    تمہیں کیا جو کوئی مرتا ہے مرے اے دشمن جاں بیداد گرے

    تری سرمگیں آنکھوں کے صدقے انہیں چھیڑ نہ پنجۂ مژگاں سے

    ابھی زخم جگر ہیں تمام ہرے اے محو تغافل بے خبرے

    لیا عشق میں جوگ بھکاری بنے ترے نقش قدم کے پجاری بنے

    کبھی سجدے کئے کبھی گرد پھرے بت سیم برے زریں کمرے

    جو تو نے ہزاروں وعدے کئے لیکن وہ کبھی ایفا نہ ہوئے

    دل ہی ہیں رہے ارمان مرے اے وعدہ شکن بت حیلہ گرے

    بیدمؔ کہیں کیا کس طرح رہے مر مر کے جیے جی جی کے مرے

    در منزل عشقش دربدرے مجنون شوریدہ سرے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    بیگم اختر

    بیگم اختر

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے