نالۂ خونیں سے روشن درد کی راتیں کرو

احمد مشتاق

نالۂ خونیں سے روشن درد کی راتیں کرو

احمد مشتاق

MORE BYاحمد مشتاق

    نالۂ خونیں سے روشن درد کی راتیں کرو

    میں نہیں کہتا دعا مانگو مناجاتیں کرو

    دل کے گچھے میں ہیں سارے موسموں کی چابیاں

    دھوپ کھولو چاندنی چھٹکاؤ برساتیں کرو

    جو نہیں سنتے ہیں ان کو بھی سناؤ اپنی بات

    جو نہیں ملتے ہیں ان سے بھی ملاقاتیں کرو

    موت خاموشی ہے چپ رہنے سے چپ لگ جائے گی

    زندگی آواز ہے باتیں کرو باتیں کرو

    مأخذ :
    • کتاب : Auraaq-e-Khezani (Pg. 29)
    • Author : Ahmad Mushtaq
    • مطبع : Rekhta Foundation (2015)
    • اشاعت : 2015

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے