نغمۂ عشق بتاں اور ذرا آہستہ

ادیب سہارنپوری

نغمۂ عشق بتاں اور ذرا آہستہ

ادیب سہارنپوری

MORE BYادیب سہارنپوری

    نغمۂ عشق بتاں اور ذرا آہستہ

    ذکر نازک بدناں اور ذرا آہستہ

    میرے محبوب کی یادوں کے بھڑکتے ہیں چراغ

    اے نسیم گزراں اور ذرا آہستہ

    جس طرف سے وہ گزرتے ہیں صدا آتی ہے

    اے قرار دل و جاں اور ذرا آہستہ

    دل ہر اک گام پہ لوگوں نے بچھا رکھے ہیں

    اور اے سرو رواں اور ذرا آہستہ

    کوچۂ دوست میں آہستہ روی کے با وصف

    دل یہ کہتا ہے یاں اور ذرا آہستہ

    ان پہ موج نفس گل بھی گراں گزرے ہے

    پرسش غم زدگاں اور ذرا آہستہ

    باندھ کر عہد وفا کوئی گیا ہے مجھ سے

    اے مری عمر رواں اور ذرا آہستہ

    کم عبادت سے نہیں ذکر بتوں کا بھی عزیزؔ

    بارے توصیف بتاں اور ذرا آہستہ

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    ادیب سہارنپوری

    ادیب سہارنپوری

    ریحانہ یاسمین

    ریحانہ یاسمین

    RECITATIONS

    عزیز سہارنپوری

    عزیز سہارنپوری

    عزیز سہارنپوری

    نغمۂ عشق بتاں اور ذرا آہستہ عزیز سہارنپوری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY