نمک ان آنسوؤں میں کم نہ تھا پر نم بہت اچھا

محمد اظہار الحق

نمک ان آنسوؤں میں کم نہ تھا پر نم بہت اچھا

محمد اظہار الحق

MORE BYمحمد اظہار الحق

    نمک ان آنسوؤں میں کم نہ تھا پر نم بہت اچھا

    گھروں میں دانۂ گندم نہ تھا ماتم بہت تھا

    مری آنکھوں پہ بھی زرتار پردے جھولتے تھے

    ترے بالوں میں بھی کچھ ان دنوں ریشم بہت تھا

    مزے سارے تماشا گاہ دنیا میں اٹھائے

    مگر اک بات جو دل میں تھی جس کا غم بہت تھا

    سیاہی رات کی پیچھے سمندر دن کا آگے

    ستارہ صبح کا میری طرح مدھم بہت تھا

    بدلتے جا رہے تھے جسم اپنی ہیئتیں بھی

    کہ رستہ تنگ تھا اور یوں کہ اس میں خم بہت تھا

    مآخذ:

    • کتاب : Urdu Adab (Pg. 62)
    • Author : Iqbal Hussain
    • مطبع : Iqbal Hussain Publishers (Jan, Feb. Mar 1996)
    • اشاعت : Jan, Feb. Mar 1996

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY